Latest Post
Loading...

Man Mera Mati Ka Darya Na Toote Na Jarrta Saain,So So Diye Jala kar Hari Preet Ka Dar Na Khulta Saain

- من میرا ماٹی کا دریا نہ ٹوٹے نہ جڑتا سائیں
سو سو دئیے جلا کر ہاری پریت کا در نہ کُھلتا سائیں

تو چاہے من مندر کردے چاہے پھیردے قبلہ سائیں
تو چاہے تو پتھر کردے چاہے موم پگھلتا سائیں

بات کہی اور مان گنوایا مان کبھی نہ جڑتا سائیں
تیری دھوپ کی چھاؤں نرالی شب سورج نہ ڈھلتا سائیں

چاہت چاہت کرتی پھرتی چاہت بیج نہ پھَلتا سائیں
عشق کا روگ لگا کے بیٹھی من شیشہ نہ دُھلتا سائیں

دنیا تیری ریشم دھاگہ رستوں بیچ الجھتا سائیں
مجھ الجھی کو سلجھا کردے تو واحد تو یکتا سائیںتو‬ 

واحد-تو-یکتا-سائیں


0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer