Latest Post
Loading...

Teri Aankh Ki Nami Main Teri Dheemi Si Hansi Main Basta Hon Main Kahein Maa

تیری آنکھ کی نمی میں
تیری دھیمی سی ہنسی میں
بستا ہوں میں کہیں میری ماں
۔
مُجھے یاد کر کے نہ رونا
میرا نام لے لے کے سونا
تیرے آس پاس ہوں میں میری ماں
۔
رہتا ہوں روز اب بھی تیرے دل میں میری ماں
جو ہوں میں دور تُجھ سے کبھی ہونا نا تُو خفا
واپس تو کبھی لوٹ کے میں آئوں گا نہیں
جو مر کے رہا زندہ میں تو ہوں وہی

(In memory of A.P.S Peshawar)

Teri Aankh Ki Nami Main

Teri Dheemi Si Hansi Main

Basta Hon Main Kahein Maa

Mujhe Yaad Kar Ke Na Rona

Mera Naam Le Le Ke Sona

Tere Aas Paas Hon Main Meri Maa

Rehta Ho Roz Ab Bhi Tere Dil Mein Meri Maa

Jo Hon Main Door Tujh Se Kabhi Hona Na Khafa

Wapas To Kabhi Lot Ke Main Aaon Ga Nahi

Jo Mar Ke Raha Zinda Main To Hon Wahi.....!


0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer