Latest Post
Loading...

Aaya Hai Mujhe Raas Tera Dard Musalsal,Kab Yunhi Howa Chehra Mera Zard Musalsal



آیا ہے مجھے راس ترا درد مسلسل
کب یونہی ہوا چہرا مرا زرد مسلسل

لہجے میں ترے گرمی کی لہریں تو بہت تھیں
کیوں ہونے لگے ہاتھ مرے سرد مسلسل

 بازار میں جاتے ہوئے میں خوفزدہ ہوں
کیوں گھورتے جاتے ہیں مجھے مرد مسلسل

کھو جائے نہ منزل کا کہیں مجھ سے نشاں بھی
اڑتی ہے مرے رستے  میں اک گرد مسلسل

لگ جاتی ہے اشکوں کی جھڑی آنکھوں میں میری
آتا ہے تصور میں وہ ہمدرد مسلسل

دلشاد محبت کے قبیلے میں پلی ہوں
رہتا ہے جہاں کرب میں ہر فرد مسلسل

دلشاد نسیم
 

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer