Latest Post
Loading...

Bahar Beetne Wali Hai Aa Bhi Ja Salma,Chaman Ki Goud Mein Aa Kar Sama Bhi Ja Salma


شاعر اختر شیرانی

انتخاب عروسہ ایمان

بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما
چمن کی گود میں آکر سما بھی جا سلما
مجھے جنوں کا سبق پھر پڑھا بھی جا سلما
بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما
کسے خبر ہے قیامت میں ہم ملیں نہ ملیں
فضاۓ روضہ ۓ جنت میں ہم ملیں نہ ملیں
کشاکش ۓ لبدیت میں ہم ملیں نہ ملیں
کشاکش لبدیت بھلا بھی جا سلما
بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما
گنوا نہ سوگ میں اپنے شباب کی راتیں
نظر نہ آئیں گی پھر مہتاب کی راتیں
یہ نکہتوں کا ہجوم اور یہ خواب کی راتیں
فضا میں حسیں بن کے خواب چھا بھی جا سلما
بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما
کسے خبر یہ گھٹائیں رہیں نہ رہیں
یہ نکہتیں یہ ہوائیں رہیں نہ رہیں
یہ مستیاں یہ فضائیں رہیں نہ رہیں
شراب ۓ وصل کا ساغر پلا بھی جا سلما
بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما
تیرے خیال کو دل میں بساۓ بیٹھے ہیں
خدائی ہو کہ خدا ہو بھلاۓ بیٹھے ہیں
سرور ۓ عہد ۓ جوانی لٹاۓ بیٹھے ہیں
تو آ کے قدر ۓ جوانی سکھا بھی جا سلما
یہ فصل اور یہ بہاریں نظر نہ آئیں گی پھر
یہ بادلوں کی قطاریں نظر نہ آئیں گی پھر
یہ ہلکی ہلکی پھواریں نظر نہ آئیں گی پھر
شراب ۓ عشق و مسرت لٹا بھی جا سلما
بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما
غموں پہ کی ہیں فدا شادمانیاں ہم نے
خدا کے نام پہ تج دی جوانیاں ہم نے
گذار دی ہیں یوں ہی زندگانیاں ہم نے
دم ۓ اخیر تو غم سے چھڑا بھی جا سلما
بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما
خبر لے جلد کہ بہکی ہوئی بہار ہے آج
نشاط ۓ خلد سے معمور سبزہ زار ہے آج
اجل پہ بھی میری ہستی کو اختیار ہے آج
غرور ۓ عشق کی ہمت بڑھا بھی جا سلما
بہار بیتنے والی ہے آ بھی جا سلما...................................*


0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer