Latest Post
Loading...

Kia Kahon Jo Hai Mere Dil Mein Utarne Wala,Baal-O-Par Bhi Hai Wahi Mere Kutarne Wala


کیا کہوں جو ہے مرے دل میں اترنے والا
بال و پر بھی ہے وہی میرے کترنے والا

اپنی برباد اُمیدوں کا کوئی رنج نہیں
دل کا دامن ہی نہیں خوشیوں سے بھرنے والا

مُشت بھر خاک ہو خود پر نہ کبھی ناز کرو
چار دن پھول بھی کھلتا ہے بکھرنے والا

وقتِ رُخصت یوں تجھے دل نے تڑپ کر دیکھا
جیسے حسرت سے تکے جاں سے گزرنے والا

کیا اُے پاسِ وفا یاد دلاؤں عاصم
وہ جو ہر بات سے اپنی ہے مکرنے والا

عاصم حجازی

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer