Latest Post
Loading...

Ranj-E-Inkaar Uthaein Gy Nahi,Silsila Aur Barhaen Gy Nahi



رنج ِ انکار اٹھائیں گے نہیں 
سلسلہ اور بڑھائیں گے نہیں

موت کی دوسری کوشش پر لوگ
مرنے والے کو بچائیں گے نہیں

باز رہیے ابھی انگڑائی سے آپ 
ورنہ تصویر میں آئیں گے نہیں 

کیسے فطرت سے بغاوت کر لیں 
خاک ہیں خاک اڑائیں گے نہیں 

ہم اگر تیرا بھرم رکھ بھی لیں
لوگ لوگوں سے چھپائیں گے نہیں 

ہم پلٹتا ہوا دیکھیں گے تمہیں 
ہم چراغوں کو بجھائیں گے نہیں 

فائدہ ترکِ مراسم کا فراغ 
ہم اسے بھول تو پائیں گے نہیں
اظہر فراغ

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer