Latest Post
Loading...

Halki Si Dastako Pe Dar-E-Qalb Khul Gaya,Main Tum Se Milne Gai To Tum Khud Mein Nahi Thay (Razab Tabraiz)



اہلِ ذوق کے لیے بطورِ خاص ۔۔۔۔

!!!!! خوابِ جاناں !!!!!
ہلکی سی دستکوں پہ درِ قلب
کھل گیا !
میں تم سے ملنے گئی تو تم
خود میں نہیں تھے ۔۔۔
در کھولنے والا کوئی ملازم تھا شائد !
چہرے پہ سو خراشیں تھیں، بدن تھا داغدار ۔۔۔
"تشریف رکھیے !
بولا
میں پہچان گیا ہوں ۔۔۔۔
صاحب کے منہ سے سنا ہے سو بار تذکرہ"
میں مسکر ا کے بولی !
"صاحب کہاں ہوئے ؟"
بولا !
"غمِ دوراں کا سب سامان ختم ہے
خریدنے گئے ہیں آتے ہی ہوں گے
اب ۔۔۔۔ "
میں گھومنے لگی وہیں پہ کہہ کے
شکریہ !
جبھی وہ بول اٹھا ٹھہر جائیے ذرا ۔۔۔۔
"یوں چائے بنا آپ کو رخصت نہ کروں گا"
میں
روکتی ہی رہ گئی پر جا چکا تھا وہ !
ناچار دو گھڑی کو مجھے بیٹھنا پڑا ۔۔۔۔
لوٹا !
تو ساتھ چائے کے بسکٹ بھی چند تھے
چائے بنا کے
ادب سے کچھ دور ہٹ گیا !
"روایتی مشروب سے عجیب چیز ہے"
چائے پہ لمسِ لب نے فوراً عندیہ دیا ۔۔۔
بڑا نمکین ذائقہ تھا گھونٹ گھونٹ میں،
جیسے حلق میں گر پڑیں چند نیم گرم اشک !
گھبرا کے دل نے چاہا
کہ
ذائقہ بدل کے دیکھ ۔۔۔۔
بسکٹ کو منہ میں لے لیا اسی خیال سے !
ذائقہ ذرا بدل گیا پر اس انداز سے !
اک بُھربُھرا سا ڈھیر تھا دوشِ زبان پر ۔۔۔
جیسے کہ کوئی پھانک لے قبر کی خاک کو !
نگل ہی سکی اس کو
نہ
اُگل ہی سکی میں !
کچھ دیر اسی پیش و پس میں جُوجھتی رہی ۔۔۔۔
اتار لیا حلق سے بادل ناخواستہ !
اک پر اسراریت تھی ان لوازمات میں ۔۔۔۔
طلسمی بک بکاہٹیں تھیں روم روم میں ۔۔۔۔
تلخی سی کوئی تلخی تھی، مزہ سا کچھ مزہ !
زبان زہر آلود تھی، دہن تھا کرکرا ۔۔۔۔۔
میں بھول گئی تھی کہ مجھے دیکھتا تھا ! وہ ۔۔۔۔
نظر ملی
تو بولا !
اور لیجیے نہ کچھ ۔۔۔۔ ؟
"صاحب تو بڑے شوق سے لیتے ہیں صبح شام"
میں سر ہلا کے رہ گئی
تلخی دبوچ کے !
بمشکل جان سمیٹ کر پھر اٹھ کھڑی ہوئی
اسرار جو چہار تھا نافز !
نکل پڑا۔۔۔۔
"اللہ" سے پہلے حلق سے !
“حافظ" نکل پڑا۔۔۔۔۔
وہ مسکرا کے بولا
"اچھا ایسا کیجیے !
بسکٹ جو بچ گئے ہیں لے لیجیے ہمراہ"
قفلِ زبان پہ مجھ کو یوں پابند کر لیا ۔۔۔۔
اک لحظہ آنکھیں میچ ! رضامند کرلیا ۔۔۔۔
بسکٹ اٹھا کے دل سے گویا بھاگ سی گئی !
تھکی جو بھاگ ہانپ کے تو جاگ سی گئی !
خدا پناہ اکیلے دل لاچار آدمی ۔۔۔۔۔
عجب ترین تھا وہ وضع دار آدمی ۔۔۔۔۔ !!!!!!!!!!
( رزب تبریز)

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer