Latest Post
Loading...

Raat Se Koi Nikah Na Kare,Zaat Se Koi Nikah Na Kare (Razab Tabraiz)


رات سے کوئی نکاح نہ کرے
ذات سے کوئی نکاح نہ کرے
بے طرح کے لفظ لاگ مانگتے
بات سے کوئی نکاح نہ کرے
گور_تشنگی کس قدر اندھیر
مات سے کوئی نکاح نہ کرے
روح کی زباں طنز سے بھری
قناعت سے کوئی نکاح نہ کرے
دین_عشق میں دکھاوے کے لیے
صلواة سے کوئی نکاح نہ کرے
خطاؤں کی نسل کشی کے واسطے
شفاعت سے کوئی نکاح نہ کرے
آنکھ میں چھپیں ہزار بجلیاں
آفات سے کوئی نکاح نہ کرے
اس کے خون میں عجیب تلخیاں
دوات سے کوئی نکاح نہ کرے
قتل_خودی میں یہ بھی ملزمہ
مراعت سے کوئی نکاح نہ کرے
نماز_عشق میں سلام مشتبہ
رکعات سے کوئی نکاح نہ کرے
راہ_حسن میں دل کے نام پہ
نجات سے کوئی نکاح نہ کرے
بلا تو دوستو ایک ہی بہت
سات سے کوئی نکاح نہ کرے
دینار_ہمدمی کلنک ہے رزب
خیرات سے کوئی نکاح نہ کرے
(رزب تبریز)

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer