Latest Post
Loading...

Kuch Kehny Ka Waqt Nahi Ye , Kuch Na Kaho , Khamosh Raho



 ابن انشاء

کچھ کہنے کا وقت نہیں یہ، کچھ نہ کہو، خاموش رہو
کچھ کہنے کا وقت نہیں یہ، کچھ نہ کہو، خاموش رہو
اے لوگو خاموش رہو, ہاں اے لوگو، خاموش رہو
سچ اچھا، پر اس کے جلو میں، زہر کا ہے اک پیالا بھی
پاگل ہو؟ کیوں ناحق کو سقراط بنو، خاموش رہو
حق اچھا، پر اس کے لئے کوئی اور مرے تو اور اچھا
تم بھی کوئی منصور ہو جو سُولی پہ چڑھو؟ خاموش رہو
اُن کا یہ کہنا سورج ہی دھرتی کے پھیرے کرتا ہے
سر آنکھوں پر، سورج ہی کو گھومنے دو، خاموش رہو
مجلس میں کچھ حبس ہے اور زنجیر کا آہن چبھتا ہے
پھر سوچو، ہاں پھر سوچو، ہاں پھر سوچو، خاموش رہو
گرم آنسو اور ٹھنڈی آہیں ، من میں کیا کیا موسم ہیں
اس بگھیا کے بھید نہ کھولو، سیر کرو، خاموش رہو
آنکھیں موند کنارے بیٹھو، من کے رکھو بند کواڑ
انشا جی لو دھاگہ لو اور لب سی لو، خاموش رہو

Poet:Ibn-e-Insha

Kuch Kehny Ka Waqt Nahi Ye , Kuch Na Kaho , Khamosh Raho
Aey Logo Khamosh Raho , Han Aey Logo Khamosh Raho
Sach Acha , Par Is Ke Jalo Mein , Zeher Ka Hai Ik Piyala Bhi
Pagal Ho ? Kion Na-Haq Ko Sukraat Bano , Khamosh Raho
Haq Acha , Par  Iske Liye Koi Aur Mare Tou Aur Acha
Tum Bhi Koi Mansoor Ho Jo Sooli Pe Chado , Khamosh Raho
Unka Ye Kehna Sooraj Hi Dharti Ke Phere Karta Hai
Sar Aankhon Par , Sooraj Hi Ko Ghoomny Do ,  Khamosh Raho
Majlas Mein Kuch Habs Hai Aur Zanjeer Ka Aahan Chubhta Hai
 Phir Socho , Han Phir Socho , Han Phir Socho , Khamosh Raho
Garam Aansoo Aur Thandi Aahein , Man Mein Kia Kia Maosam Hain
Is Baghia Ke Bhaid Na Kholo , Sair Karo ,  Khamosh Raho
Aankhein Mond Kinare Baitho , Man Ke Rakho Band Kawad
INSHA JI Lo Dhaga Lo Aur Lab Sii Lo , Khamosh Raho

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer