Latest Post
Loading...

Zubaan Pe Muhar Gadai Hai Kis Se Baat Karon Haroof Kasa Be-Maya Hain , Qalam Kashkol


زباں پہ مُہر گدائی ہے ، کِس سے بات کروں
حُروف کاسہ بےمایہ ہیں ، قلم کشکول
ضمیر بےحِس و حرکت ہے زیست بےپہلُو
شِکَن ہے دامَن ِ ہستی میں ، آستِین پہ جھول
مَیں خود طِلسم کی پریوں سے بےکِنار ہؤا
کِسے کہوں کہ مِری رُوح کے دریچے کھول
میں اِک سراب کی خواہش پہ بیچ آیا ہُوں
تمام بادہ و ساغر ، تمام تشنہ لبی
حریم ِ عقل میں جس کا کوئی جواز نہ تھا
نِشاط ِ دل تھی وُہی زندگی کی بےسبَبی
اُجڑ گئے مِرے گُلگَشت ، میرے رُکنا باد
مری دُعائے سَحر ، میری آہ ِ نِیم شبی
کہاں وُہ دِن تھے کہ پروائے ننگ و نام نہ تھی
کہاں یہ وقت کہ سایہ سنبھل کے چلتا ہے
مجھے کِسی بھی تعیُّن پہ اِختیار نہیں
یہ کوئی اَور مِرے راستے بدلتا ہے
جنُوں سے رسم نہ رکُّھوں تو جاں سُلگتِی ہے
طلب کا قرض اُتاروں تو جِسم جلتا ہے
 
Zubaan Pe Muhar Gadai Hai Kis Se Baat Karon
Haroof Kasa Be-Maya Hain , Qalam Kashkol
Zameer Be-His-O-Harkat Hai Zeest Be-Pehlo 
Shigan Hai Daman-E-Hasti Mein , Aasteen Pe Jhol
Main Khud Tilasam Ki Parion Se Be-Kinaar Hua 
Kise Kahon Keh Meri Rooh Ke Dareeche Khol
Main Ik Saraab Ki Khuwahish Pe Baich Aaya Hon 
Tamaam Badah-O-Saghar,Tamaam Tashna Labi
Hareem-E-Aqal Mein Jis Ka Koi Jawaaz Na Tha 
Nishaat-E-Dil Thi Wahi Zindagi Ki Be-Sababi
Ujad Gaye Mere Gulgusht Mere Ruknabad 
Meri Dua-E-Sahar Meri Aah-E-NeemShabi
Kahan Wo Din Thy Keh Parwa-E-Nang-O-Naam Na Thi 
Kahan Ye Waqt Keh Saaya Sanbhal Ke Chalta Hai
Mujhe Kisi Bhi Ta'ayun Pe Ikhteyaar Nahi 
Ye Koi Aur Mere Rasty Badalta Hai
Janoon Se Rasm Na Rakhon Tou Jaan Sulagti Hai 
Talab Ka Qarz Utharon Tou Jisam Jalta Hai

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer