Latest Post
Loading...

Nai Zamanon Ka Karb Orre,Zaeef Lamhe Nidhal Yaaden

نئے زمانوں کا کرب اوڑھے
ضعیف لمحے نڈھال یادیں
تمہارے خوابوں کے بند کمروں میں
لوٹ آئیں تو لوٹ آنا
اگر اندھیروں میں چھوڑ کر
تم کو بھول جائیں تمہارے ساتھی
اور اپنی خاطر ھی اپنے اپنے دئیے جلائیں
تو لوٹ انا
مری وہ باتیں تو جن پہ بے اختیار ھنستا تھا
کھلکھلا کر
بچھڑنے والے
مری وہ باتیں کبھی رلائیں تو لوٹ آنا


0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer