Latest Post
Loading...

Andheri Raat Mein Shamma Jalana Bhool Jate Ho Hamari Yaad Ati Hai,Bhulana Bhool Jate Ho


اندھیری رات میں شمع جلانا بھول جاتے ہو

ہماری یاد آتی ہے ، بھلانا بھول جاتے ہو

تمہاری اک یہی عادت پریشاں ہم کو رکھتی ہے

نظر میں آ تو جاتے ہو ، سمانا بھول جاتے ہو

ہمیں محسوس ہوتا ہے ، ہمارے قرب میں آ کر

جو تنہائی میں بیتی ہے ، سنانا بھول جاتے ہو

تمھارے ہاتھ میں اکثر گلابی پھول ہوتا ہے

ہماری راہ میں لیکن ، بچھانا بھول جاتے ہو

تمہیں تو لوٹ کر جانے کی اکثر فکر رہتی ہے 

مگر جب لوٹ جاتے ہو ، تو آنا بھول جاتے ہو

سنا ہے تم ہتھیلی پہ ہمارا نام لکھتے ہو

مگر جب ہَم سے ملتے ہو ، دکھانا بھول جاتے ہو

سب جانتے ہیں کہ تم ہم پے ہی مرتے ہو

مگر جب ہم سے ملتے ہو ، بتانا بھول جاتے ہو


Andheri Raat Mein Shamma Jalana Bhool Jate Ho

Hamari Yaad Ati Hai,Bhulana Bhool Jate Ho

Tumhari Ik Yahi Adat Preshan Hamko Rakhti Hai

Nazar Mein Aa Tou Jate Ho,Samana Bhool Jate Ho

Hamein Mahsoos Hota Hai,Hamare Qurb Mein Aa Kar

Jo Tanhai Mein Beeti Hai,Sunana Bhool Jate Ho

Tumhare Haath Mein Aksar Gulabi Phool Hota Hai

Hamari Rah Mein Lekin,Bichana Bhool Jate Ho

Tumhain Tou Laot Kar Jane Ki Aksar Fikar Rehti Hai

Magar Jab Laot Jate Ho,Tou Aana Bhool Jate Ho

Suna Hai Tum Hatheli Pe Hamara Naam Lekhty Ho

Magar Jan Ham Se Milty Ho,Dekhana Bhool Jate Ho

Sab Janty Hain Keh Tum Ham Pe Hi Marty Ho

Magar Jab Ham Se Milty Ho,Batana Bhool Jate Ho


0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer