Latest Post
Loading...

Jitny Bhi Ghar Hain Yahan Taron Se Be-Niaz,Itni Hi Roshni Main Sitaron Se Cheen Loon


جتنے بھی گھر ہیں یہاں تاروں سے بے نیاز
اتنی ہی روشنی میں ستاروں سے چھین لوں
جتنے بھی گھر ہیں یہاں جاڑوں سے بے نیاز
اتنی ہی چادریں میں مزاروں سے چھین لوں
اتنی تو جرأتیں ہوں میری کم سے کم بلند
شاہوں کے تاج فقط اشاروں سے چھین لوں

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer