Latest Post
Loading...

Suna Hai Yaad Karte Ho Keh Jab Bhi Shaam Dhalti Hai


سنا ہے یاد کرتے ہو
کہ جب بھی شام ڈھلتی ہے
ہجر میں جان جلتی ہے
تم اپنی رات کا اکثر
سکوں برباد کرتے ہو 
سنا ہے یاد کرتے ہو
کہ جب پنچھی لوٹ آتے ہیں
غموں کے گیت گاتے ہیں
" سنو تم لوٹ آؤ نا "
یہی فریاد کرتے ہو
سنا ہے یاد کرتے ہو
ستارے جب بھی رات میں
فلک پہ جگمگاتے ہیں
وہ بیتے ہوے کتنے پل
تمہیں جی بھررلاتے ہیں
تم اس دم اپنی آنکھوں میں
مجھے آباد کرتے ہو
سنا ہے یاد کرتے ہو
مجھے تم یاد کرتے ہو

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer