Latest Post
Loading...

Hum Ghoom Chuke Basti Ban Mein Ik Aas Ki Phans Liye Man Mein


شاعر ابن انشا

انتخاب
عروسہ ایمان

ہم گھوم چکے بستے بن میں
اک آس کی پھانس لیے من میں
کوئی ساجن ہو کوئی پیارا ہو
کوئی دیپک ہو کوئی تارا ہو
جب جیون رات اندھیری ہو
اک بار کہو تم میری ہو
جب ساون بادل چھاۓ ہوں
جب پھاگن پھول کھلاۓ ہوں
جب چندا روپ لٹاتا ہو
جب سورج دھوپ نہاتا ہو
یا شام نے بستی گھیری ہو
اک بار کہو تم میری ہو
ہاں دل کا دامن پھیلا ہے
کیوں گوری کا دل میلا ہے
ہم کب تک پیت کے دھوکے میں
تم کب تک دور جھروکے میں
کب دید سے دل کو سیری ہو
اک بار کہو تم میری ہو
کیا جھگڑا سود خسارے کا
یہ کاج نہیں بنجارے کا
سب سونا روپا لے جاۓ
سب دنیا دنیا لے جاۓ
تم اک مجھے بہتیری ہو
اک بار کہو تم میری ہو

 

Poet Ibn-E-Insha

Type
By

UROOSA EMAAN

Hum Ghoom Chuke Basti Ban Mein

Ik Aas Ki Phans Liye Man Mein

Koi Sajan Ho Koi Pyara Ho

Koi Deepak Ho Koi Tara Ho

Jab Jeevan Raat Andheri Ho

Ik Baar Kaho Tum Meri Ho

Jab Sawan Baadal Chhaaye Hon

Jab Phaagan Phool Khilaaye Hon

Jab Chanda Roop Lutata Ho

Jab Sooraj Dhoop Nahata Ho

Ya Sham Ne Basti Gheri Ho

Ik Baar Kaho Tum Meri Ho

Haan Dil Ka Daman Phela Hai

Kion Gori Ka Dil Mela Hai

Hum Kab Tak Peet K Dhoke Mein

Tum Kab Tak Door Jharoke Mein

Kab Deed Se Dil Ko Seri Ho

Ik Baar Kaho Tum Meri Ho

Kaya Jhagrra Sood Khasaare Ka

Ye Kaaj Nahi Banjaare Ka

Sub Sona Roopa Le Jaye

Sub Dunya Dunya Le Jaye

Tum Aik Mujhe Behteri Ho

Ik Baar Kaho Tum Meri Ho........................................*


0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer