Latest Post
Loading...

Rang-O-Ras Ki Hos Aur Bas,Masla Dastras Aur Bas


رنگ و رس کی ہوس اور بس
مسئلہ دسترس اور بس

یوں بُنی ہیں رگیں جسم کی
ایک نس ٹس سے مس اور بس

سب تماشائے کن ختم شد
کہہ دیا اس نے بس اور بس

کیا ہے مابینِ صیاد و صید
ایک چاکِ قفس اور بس

اس مصور کا ہر شاہکار
ساٹھ پینسٹھ برس اور بس

عمار اقبال

0 comments:

Post a Comment

 
Toggle Footer